حکمرانوں کو ایوانوں سے نکالنے کا وقت آ گیا ہے، آصف زرداری

گڑھی خدا بخش: سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ اگر موجودہ وزیراعظم کو رہنے دیا تو پاکستان کو سو سال پیچھے دھکیل دے گا۔ حکمرانوں کو ایوانوں سے نکالنے کا وقت آ گیا ہے۔

گڑھی خدا بخش میں سابق وزیراعظم اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے بانی ذوالفقار علی بھٹو کی چالیسویں برسی کے موقع پر اپنے خطاب میں آصف علی زرداری نے کہا کہ غریب کیلئے بجلی کا بل دینا بھی مشکل ہو گیا ہے۔ ان کو غریبوں کا احساس ہی نہیں ہے۔

سابق صدر آصف علی زرداری نے کارکنوں سے خطاب میں کہا کہ بھائیو! تیار ہو جاؤ وقت آ گیا ہے۔ انہیں گھر بھیجنے کے علاوہ کوئی طریقہ نہیں ہے۔ چاہے میں جیل میں ہوں یا باہر اب ان کو زیادہ وقت نہیں دے سکتے۔ کارکن صبر کریں، بہت جلد ان کو نکالنے کی تحریک چلائیں گے۔

آصف علی زرداری نے اپنا پلان بتاتے ہوئے کہا کہ ہم ان کو ایوانوں سے نکالیں گے۔ ہم سڑکوں پر رہیں گے اور ان کو نکال کر ہی واپس آئینگے۔ اگر موجودہ وزیراعظم کو رہنے دیا تو پاکستان کو سو سال پیچھے دھکیل دے گا۔

انہوں نے موجودہ حکومت کی پالیسیوں اور مہنگائی میں اضافے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ غریب کے لیے بجلی کا بل دینا مشکل ہو گیا ہے۔ ان کو غریبوں کا احساس ہی نہیں ہے۔ ٹماٹر اور پیاز سمیت ہر چیز دگنا ہو چکی ہے۔ سلیکٹو وزیراعظم خود پھٹ پڑا ہے کہ پیسہ اکٹھا نہیں ہو رہا۔ اگر پیسے اکٹھے نہیں ہو رہے تو اقتدار چھوڑ دو۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ پہلے ہی کہا تھا کہ ہمیں حکومت کی نیت پر شک ہے۔ اٹھارویں ترامیم کو ختم کرنے کے لیے میرے خلاف کیسز بنائے جا رہے ہیں۔

اس موقع پر اپنے خطاب میں پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ آج شہید بھٹوکے عدالتی قتل کا چالیسواں سال ہے۔ آج کا دن ہر ادارے اور منصف سے سوال پوچھ رہا کہ بتاؤ غریبوں کے محافظ کو قتل کیوں کیا گیا؟ آج کا دن پاکستان کے محروم طبقات کی امیدوں کا قتل ہوا۔ آج کے دن آئین پاکستان کے خالق کا خون ہوا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں