پاکستان کا مسئلہ کشمیر کو عالمی عدالت انصاف لے جانے کا فیصلہ

اسلام آباد: پاکستان نے مسئلہ کشمیر کو عالمی عدالت انصاف میں لے جانے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے۔ ذرائع کے مطابق آئندہ ماہ جنیوا میں انسانی حقوق کمیشن اجلاس بلانے کیلئے وزارت خارجہ نے تیاری شروع کر دی ہے اور اس سلسلے میں سابق سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ کی خدمات حاصل کر لی گئی ہیں۔

ذرائع کے مطابق عالمی عدالت انصاف میں مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی کا معاملہ اٹھایا جائے گا۔ پاکستان نے یہ اہم معاملہ اٹھانے کیلئے بین الاقوامی وکلا سے رابطہ کر لیا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قر یشی سے وزیراعظم کی نمائندہ خصوصی برائے سفارتی تعلقات سابق سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے ایک ملاقات کی تھی۔

ملاقات میں مقبوضہ جموں وکشمیر کی گھمبیر صورتحال سمیت اہم سفارتی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر خارجہ نے خارجہ محاذ پر ملک وقوم کے لئے تہمینہ جنجوعہ کی طویل خدمات کو سراہا۔

انہوں نے نمائندہ خصوصی برائے سفارتی تعلقات تہمینہ جنجوعہ کو فوراً جنیوا پہنچ کر اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے اور مقبوضہ جموں وکشمیر میں بھارت کی جانب سے جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اقوام عالم کے سامنے

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے تصدیق کی ہے کہ پاکستان عالمی عدالت انصاف میں قابض بھارتی فوج کے ہاتھوں مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی کا معاملہ اٹھائے گا۔

آئندہ ماہ جینوا میں انسانی حقوق کمیشن کے اجلاس کے لیے وزارت خارجہ میں بھی خصوصی تیاری کی جا رہی ہے جس کے لیے سابق سیکرٹری تہمینہ جنجوعہ کی خدمات حاصل کی گئی ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ کشمیر پر توقع سے زیادہ ہمارے موقف کی حمایت کر رہے ہیں جبکہ حکومت نے مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لیے تمام اپوزیشن جماعتوں کو ساتھ لے کر چلنے کا فیصلہ کیا ہے

انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا اصل چہرہ بے نقاب کرنے کے لیے وزیراعظم عمران خان سندھ میں ہندو کمیونٹی کے ساتھ بھی ملاقات کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں